خیبر پختونخوا میں 12کروڑ ٹن سے زائد کوئلے کے ذخائر موجود

اسلام آباد ۔07 اکتوبر(اے پی پی)خیبر پختونخوا میں 12کروڑ ٹن سے زائد کوئلے کے ذخائر موجود ہیں۔ پاکستان سمیت دنیا بھر میں کوئلے ”بلیک گولڈ“ کی کان کنی کرنے والے مزدوروں کے حالات زندگی قابل تشویش ہیں۔ ندیم نظر نے اپنی تحقیقی رپورٹ میں کہا ہے کہ دنیا میں ہر سال 200سے زائد کان کن اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں جس کا بنیادی سبب شعبہ میں کان کنی کے روایتی طریقہ کار پر عملدرآمد ہے۔

Reference: http://urdu.app.com.pk

انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ٹیلی کام کے شعبوں میں دو ماہ کے دوران 21.4 ملین ڈالرکی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کی گئی، سرمایہ کاری بورڈ

اسلام آباد ۔ 4 اکتوبر (اے پی پی) رواں مالی سال کے ابتدائی دومہینوں میں ملک میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اورٹیلی کام کے شعبوں میں 21.4 ملین ڈالرکی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ریکارڈ کی گئی ہے، گزشتہ 10 برسوں میں آئی ٹی اورٹیلی کام کے شعبے میں مجموعی طورپر384.2 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ہوئی ہے۔ سرمایہ کاری بورڈ کے اعدادوشمارکے مطابق انفارمیشن ٹیکنالوجی اورٹیلی کام کے شعبے ان شعبوں میں شامل ہیں جہاں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کی شرح زیادہ ہے۔

Reference: http://urdu.app.com.pk

National Incubation Center Lahore endorses Cheetay’s success

National Incubation Center (NIC) Lahore’s Industry Tour took place at Cheetay Logistics. The main objective of the tour was for aspiring entrepreneurs to meet employees and founders of successful start-ups.

National Incubation Centre Lahore & Cheetay.pk

The focus of the session at Cheetay was to talk about building a brand from the ground up. Ahmed Khan, founder and CEO of cheetay.pk, talked about how Cheetay came into being and how to cope with the trials and tribulations of starting, managing and sustaining a successful tech venture. A group of 30 aspiring entrepreneurs participated in this one day event.

The post National Incubation Center Lahore endorses Cheetay’s success appeared first on Technology Times.

Reference: www.technologytimes.pk

ملک میں پانی کی شدید قلت کے تناظر میں آبی ذخائر کے اضافہ کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کی ضرورت ہے، ایف پی سی سی آئی کی آبی ذرائع ایڈوائزری کمیٹی کی رپورٹ

اسلام آباد ۔ یکم اکتوبر (اے پی پی) پاکستان کے جنوب مشرقی حصہ میں سالانہ 125 ملی میٹر جبکہ شمال مغرب میں 750 ملی میٹر بارش ہوتی ہے۔ بارش سے ملک کو سالانہ 32 ارب مکعب میٹر پانی حاصل ہوتا ہے۔ وفاق ایوانہائے صنعت و تجارت پاکستان (ایف پی سی سی آئی) کی آبی ذرائع ایڈوائزری کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق ملک میں 9 لاکھ ٹیوب ویلز کے ذریعے 59 ارب مکعب میٹر پانی حاصل کیا جا رہا ہے۔ اس کے علاوہ تربیلا اور منگلا ڈیمز اور 48 بڑی نہروں اور 19 بیراجوں سے مجموعی طور پر 71 ارب مکعب میٹر پانی حاصل ہوتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق سال 2000ءمیں زرعی شعبہ میں پانی کی کل کھپت 69 فیصد، صنعتی شعبہ میں 23 فیصد اور گھریلو صارفین کی کھپت 8 فیصد تھی لیکن 2016ءتک زرعی شعبہ کی پانی کی کھپت 88.9 فیصد، صنعتی شعبہ میں 3.4 فیصد اور گھریلو صارفین کی 6.5 فیصد ہو گئی۔ رپورٹ کے مطابق 1950ءمیں ملک میں اوسط فی کس پانی کی دستیابی 5300 مکعب میٹر تھی جو 2015ءمیں 1014 کیوبک میٹر تک کم ہو گئی۔

Reference: http://urdu.app.com.pk

اگست 2018ءکے دوران ملک میں یوریا کھاد کی قلت 73 ہزار ٹن رہی

اسلام آباد ۔ 26 ستمبر (اے پی پی) اگست 2018ءکے دوران ملک میں یوریا کھاد کی قلت 73 ہزار ٹن رہی ہے۔ کھاد تیار کرنے والی مقامی صنعت کے اعدادوشمار کے مطابق اگست کے دوران یوریا کھاد کی مقامی پیداوار 87 ہزار ٹن کم رہی ہے جو ماہانہ طلب کے مقابلہ میں 12 فیصد کم رہی ہے۔ رپورٹ کے مطابق اگست 2018ءکے دوران مقامی صنعت کی پیداوار 4 لاکھ 60 ہزار ٹن ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ مقامی طلب کا تخمینہ 5 لاکھ 47 ہزار ہے۔ اس طرح اگست کے دوران یوریا کھاد کی مقامی طلب کے مقابلہ میں پیداوار 87 ہزار ٹن کم رہی ہے جس کے تناظر میں حکومت نے کھاد کی درآمد کا فیصلہ کیا ہے تاکہ آئندہ سیزن کے دوران زرعی شعبہ کو کھاد کی قلت کے مسئلہ سے تحفظ فراہم کیا جا سکے۔

Reference: http://urdu.app.com.pk