7th Pakistan CIO Summit & IT exhibit 2019

The 7th Pakistan CIO Summit and 5th IT showcase 2019 held on 26th  of March in Marriot Hotel, Karachi. The Pakistan CIO Summit being the only platform, where a robust number of CIOs, departmental IT Heads, and other IT Professionals get together annually to negotiate on mutual interests.

7th Pakistan CIO Summit & IT exhibit Pakistan 2019

As Digital Transformation is now considered as a necessity instead of an option. Confer to that, this year’s theme of the Pakistan CIO Summit is “Digital Transformation – Stay Ahead”. In today’s world of technology, all organizations look up to their CIOs to make digital transformation a reality within their businesses.

The CIO Summit will be fragmented with two technical sessions, one is ‘Digital Transformation’ and the other is ‘Cyber-Security’ with regard to digital renewal.

Moving ahead, there are some pessimistic concerns, the booth fees that showcase IT products are in millions and per participant fee is about Rs 32,500 excluding taxes that is not justifying in country like Pakistan where our budding youth is looking for erudite platforms but the sky-scraping cost of doorway becomes the obstacle in their way to join and interrelate with IT headship. The International booth fee is US$ 500 that is aprox 70,000. 

Additionally, the core aims of the Pakistan CIO summit and the allied exhibition is to present solutions for tomorrow, to bring on latest technologies under the limelight and to appraise how they can play a significant role in making Pakistan an IT Hub in the region.

The post 7th Pakistan CIO Summit & IT exhibit 2019 appeared first on Technology Times.

Reference: www.technologytimes.pk

کبھی آپ نے سوچا! اسمارٹ فون کا مستقبل کیا ہوگا؟

فرانس(مانیٹرنگ ڈیسک) صرف ایک دہائی کے عرصے میں پوری دنیا میں اسمارٹ فونز کی بہتات ہوجانے کے بعد کیا آپ نے کبھی سوچا کہ اس ٹیکنالوجی کا اگلا پڑاؤ کیا ہوگا؟ فرانسیسی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کی رپورٹ کے مطابق اسمارٹ فون بنانے والی 2 بڑی کمپنیاں ایپل اور سام سنگ نت نئے فیچرز پر مبنی اور بہتر سے بہتر ٹیکنالوجی کے حامل فون متعارف کروانے میں مصروف ہیں۔

لیکن بڑی مارکیٹوں کے سکڑنے کے باعث ان کی فروخت میں قابلِ ذکر اضافہ نہیں ہوا۔ اسمارٹ فون میں آئندہ آنے والے وقتوں میں فائیو جی ٹیکنالوجی یا ففتھ جنریشن وائرلیس نیٹ ورک، نئے طرح کے آپشنز اور ورچوووئل ٹیکنالوجی متعارف کروائے جانے کا امکان ہے۔  اسمارٹ فون ختم کرنے کے منصوبے کا آغٖاز؟ لیکن کچھ تجزیہ کاروں کا اصرار ہے کہ اسمارٹ فون میں کچھ حیران کردینے والی بالکل مختلف طرح کی چیزیں آسکتیں ہیں۔ فیوچر ٹوڈے نامی ادارے کی بانی ’ایمی ویب‘ اپنی سالانہ رپورٹ میں سال 2018 کے ٹیکنالوجی ٹرینڈز کے حوالے سے لکھتی ہیں کہ ’پرانے طرز کے اسمارٹ فونز کا دور اب ختم ہونے والا ہے‘۔ انہوں نے پیش گوئی کی کہ آنے والا وقت سینسر بیسڈ ڈیوائس کا ہوگا جسے آواز، اشاروں اور حرکت کے ذریعے چلایا جاسکے گا۔ اپنی رپورٹ میں انہوں نے بتایا کہ اسمارٹ فونز سے نہ نظر آنے والی اور پہنی جانے والے اسمارٹ آلات تک کا سفر بائیو میٹرک سینسر والے ایئر بڈ اور اسپیکر، حرکت محسوس کرنے والے بریسلیٹ اور انگوٹھیاں، معلومات ریکارڈ کرنے اور پیش کرنے والے اسمارٹ گلاسز، ہمیشہ کے لیے دنیا کی محسوس کرنے کی صلاحیت کو بدل کر رکھ دیں گے۔ اپنے اسمارٹ فون کو کبھی صاف کیا ہے؟ تاہم دیگر تجزیہ کاروں کا کہنا تھا کہ مارکیٹ محدود ہونے کے باوجود اسمارٹ فونز کا اختتام اتنی جلدی ممکن ہوتا دکھائی نہیں دیتا۔ اے بی آئی ریسرچ سے وابستہ ڈیوڈ میک کوئین کا کہنا تھا کہ اسمارٹ فون کہیں نہیں جارہے البتہ ان کی شکل اور اقسام میں تبدیلی ضرور آسکتی ہے، اسمارٹ فون مارکیٹ ابھی کئی سالوں تک برقرار رہے گی۔ ان کا اپنی رپورٹ میں کہنا تھا کہ موبائل انڈسٹری میں مزید ٹچ سے مبرا ٹیکنالوجی، مصنوعی ذہانت اور حرکات وسکنات کو قابو کرنے والے فیچر آئیں گے جبکہ نئے فونز میں مزید

بہتر بائیو میٹرک، چہرہ پہچاننے کی صلاحیت شامل ہوگی۔ واضح رہے کہ رواں سال دنیا بھر میں اسمارٹ فون کی فروخت میں 0.7 فیصد کی کمی دیکھی گئی۔ پرانا اسمارٹ فون اس احتیاط کے بغیر فروخت نہ کریں خیال رہے کہ دنیا میں سب سے زیادہ اسمارت فون امریکا میں استعمال ہوتے ہیں جہاں 50 سال سے کم عمر کے 91 فیصد افراد اسمارٹ فون استعمال کرتے ہیں اور 13 سے 19 سال کے 95 فیصد

نوجوانوں کی اسمارت فون تک رسائی ہے۔ اس حوالے سے ایک رائے یہ بھی ہے کہ صارفین میں اسمارٹ فون کی پسندیدگی جدید ترین آلات، مثلاً ایمیزون اور گوگل کی جانب سے پیش کیے گئے اسمارٹ اسپیکر، کے متعارف ہونے کے باوجود رہے گی۔ لیکن یہ بھی کہا جارہا ہے کہ نئی قسم کی ڈیوائسز مزید جدید ترین اور اسمارٹ ہوں گی جس میں ہینڈ سیٹ کی جگہ مصنوعی ذہانت بھی لے سکتی ہے۔

The post کبھی آپ نے سوچا! اسمارٹ فون کا مستقبل کیا ہوگا؟ appeared first on JavedCh.Com.

Reference: JavedCh.Com

نوکیا کمپنی رواں ماہ دنیا کا پہلا 5 بیک کیمروں والا فون متعارف کرانے والی ہے

امریکا(مانیٹرنگ ڈیسک) نوکیا فونز فروخت کرنے کا لائسنس رکھنے والی کمپنی ایچ ایم ڈی گلوبل ممکنہ طور پر رواں ماہ دنیا کا پہلا 5 بیک کیمروں والا فون متعارف کرانے والی ہے۔ نوکیا 9 پیور ویو کو بارسلونا میں شیڈول موبائل ورلڈ کانگریس کے موقع پر پیش کیے جانے کا امکان ہے، جس کی تصاویر پہلے ہی سامنے آچکی ہیں۔ مگر اب گوگل اور امریکا کے فیڈرل کمیونیکشنز کمیشن (ایف سی سی) جیسے

اداروں نے اس فون کے تمام تر فیچر لیک کردیئے ہیں اور یہ بھی ثابت کردیا ہے کہ یہ فون واقعی موجود ہے اور متعارف ہونے والا ہے۔ گوگل نے غلطی سے نوکیا 9 کو اپنی اینڈرائیڈ انٹرپرائز ڈیوائس سائٹ میں شال کردیا تھا جسے بعد میں ہٹا دیا گیا۔ مگر انٹرنیٹ صارفین نے اس کے اسکرین شاٹ اور تفصیلات محفوظ کرلیں اور یہ نوکیا کا اب تک کا سب سے دلچسپ فون ثابت ہونے والا ہے۔ گوگل کی سائٹ پر درج تفصیلات کے مطابق نوکیا 9 میں 6 انچ ڈسپلے دیا جائے گا جبکہ 4 جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج (ممکنہ طور پر زیادہ ریم اور اسٹوریج والا ورژن بھی ہوگا) اور اینڈرائیڈ 9 آپریٹنگ سسٹم دیا جائے گا۔ اس فون میں بیزل کم کیے گئے ہیں مگر پھر بھی اوپر اور نیچے بیزل موجود ہیں مگر نوچ نہیں دیا جارہا ہے۔ ماضی میں سامنے آنے والی تفصیلات کے مطابق اس فون میں فنگرپرنٹ سنسر اسکرین کے اندر نصب ہوگا تاہم گوگل کی تفصیلات میں اس بارے میں کچھ واضح نہیں کیا گیا۔ ایف سی سی نے بھی فون کے خاکے کو اپنی ویب سائٹ میں جاری کیا جس میں 5 کیمرے دیکھے جاسکتے ہیں مگر فنگرپرنٹ سنسر کی کوئی جگہ نہیں، جو کہ ممکنہ طور پر اسکرین کے اندر ہی ہوگا۔ اس فون کی خاص بات اس کے 5 کیمروں کا سیٹ اپ ہوگا جو پہلی بار کسی اسمارٹ فون میں نظر آئے گا۔ سام سنگ نے کچھ ماہ پہلے 4 بیک کیمروں والا فون متعارف کرایا تھا مگر نوکیا 5 بیک کیمروں کے ساتھ یہ ریکارڈ توڑنے کے قریب ہے۔

The post نوکیا کمپنی رواں ماہ دنیا کا پہلا 5 بیک کیمروں والا فون متعارف کرانے والی ہے appeared first on JavedCh.Com.

Reference: JavedCh.Com

واٹس ایپ میں صارفین کے پیغامات کو محفوظ رکھنے کے لیے فیس آئی ڈی فیچر متعارف

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) واٹس ایپ میں صارفین کے پیغامات کو محفوظ رکھنے کے لیے فیس آئی ڈی یا ٹچ آئی ڈی سپورٹ کا فیچر متعارف کرادیا گیا ہے۔ یعنی اس سپورٹ کے بعد صارفین چہرے کی شناخت یا ٹچ آئی ڈی سے اپنی ڈیوائسز پر واٹس ایپ اپلیکشن اوپن کرسکیں گے جبکہ ان کے علاوہ کوئی اور اسے اوپن کرکے پیغامات نہیں دیکھ سکے گا۔ تاہم یہ فیچر آئی او ایس صارفین کے لیے متعارف کرایا گیا ہے۔

جس سے آئی فون ایکس، آئی فون ایکس ایس، آئی فون ایکس ایس میکس اور آئی فون ایکس آر کے صارفین فیس آئی ڈی سے جبکہ دیگر آئی فون ماڈلز میں ٹچ آئی ڈی سے اس سے فائدہ اٹھانا ممکن ہوگا۔ اس نئے فیچر کو قابل استعمال بنانے کے لیے آئی فون کی سیٹنگز میں جاکر اکاﺅنٹس اور پھر پرائیویسی پر کلک کریں اور اسکرین لاک ان ایبل کریں۔ اسکرین لاک ان ایبل ہونے پر واٹس ایپ ہر بار اوپن کرنے پر ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی کو استعمال کرنا ہوگا۔ صارفین کے سامنے چند آپشن بھی ہوں گے جیسے فوری واٹس ایپ ان لاک کرنا، ایک منٹ بعد، 15 منٹ بعد یا ایک گھنٹے بعد کے آپشن بھی ہوں گے۔ ان میں سے کسی کا انتخاب کرنے کے بعد جب آپ واٹس ایپ کو ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی سے ان لاک کریں گے تو یہ اپلیکشن اتنی دیر بعد ہی اوپن ہوگی۔ اگر ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی صارفین کی شناخت کرنے میں ناکام رہے تو ایپ تک رسائی کے لیے پاس کوڈ کا سہارا لینا ہوگا۔ واٹس ایپ میں اس فیچر کی آزمائش گزشتہ سال شروع ہوئی تھی اور ابھی بھی یہ آزمائشی مراحل سے ہی گزر رہی ہے جس کا حتمی ورژن کچھ عرصے میں متعارف ہوگا۔ واٹس ایپ کی جانب سے اسی طرح کے فیچر اینڈرائیڈ صارفین کے لیے متعارف کرانے پر بھی کام ہورہا ہے جس میں فنگرپرنٹ اسکینر کی مدد سے اپلیکشن اوپن کی جاسکے گی۔ یہ فیچر فنگرپرنٹ سنسر سے لیس ایسے اسمارٹ فونز میں استعمال ہوسکے گا جس میں اینڈرائیڈ 6 مارش میلو یا اس کے بعد کے ورژن ہوں گے۔ تاہم یہ فیچر کب تک سامےن آئے گا، فی الحال اس پر کچھ کہنا مشکل ہے۔

The post واٹس ایپ میں صارفین کے پیغامات کو محفوظ رکھنے کے لیے فیس آئی ڈی فیچر متعارف appeared first on JavedCh.Com.

Reference: JavedCh.Com

ٹچ اسکرین اور بٹنوں سے محروم مستقبل کے فونز کیسے ہوں گے؟

امریکا (مانیٹرنگ ڈیسک) آئی فون ہو یا کوئی اینڈرائیڈ فون ، سب اسمارٹ ڈیوائسز کو استعمال کرنے کے لیے بٹن اور ٹچ اسکرین کی ضرورت ہوتی ہے مگر بہت جلد یہ سب بدل جائے گا۔ جی ہاں مستقبل قریب میں اسمارٹ ڈیوائسز میں ایسی ٹیکنالوجی استعمال ہوگی جو آپ کو محض دور سے ہاتھ کی حرکت سے فون استعمال کرنے میں مدد دے گی۔ گوگل یہ ٹیکنالوجی تیار کررہا ہے اور اسے امریکا کے

فیڈرل کمیونیکشن کمیشن کی جانب سے پراجیکٹ سولی کی منظوری مل گئی ہے۔ اس پراجیکٹ کا اعلان گوگل نے 4 سال قبل کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ عوامی دلچسپی کے لیے ہے اور اب اس کمپنی نے اس کی تیاری پر کام شروع کردیا ہے۔ یہ ٹیکنالوجی انٹرایکٹو کنٹرول سسٹم ہوگا جس میں یوزر راڈار بیسڈ موشن سنسرز ہاتھوں کی حرکات کو شناخت کریں گے۔ یہ کچھ ایسا ہی خیال ہے جو سائنس فکشن فلم مائینورٹی رپورٹ میں پیش کیا گیا تھا اور گوگل ٹیکنالوجی کی مدد سے ڈیوائسز کے استعمال کے لیے لوگوں کو کسی بھی قسم کے فزیکل کنٹرولز کی ضرورت نہیں ہوگی۔ گوگل کا خیال ہے کہ اس سے لوگ ٹی وی سے لے کر اسمارٹ واچز تک سب کچھ چھوئے بغیر کنٹرول اور استعمال کرسکیں گے۔ کسی ڈیوائس کے بٹن دبانے یا والیوم ناب دبانے جیسے ہاتھ کی حرکتپر یہ سنسر کام کریں گے اور آپ کا ہاتھ ہی ایک یونیورسل ریموٹ کنٹرول بن جائے گا۔ پراجیکٹ سولی کی ویب سائٹ میں موجود وضاحت کے مطابق اگرچہ یہ کنٹرولز ورچوئل ہوں گے، مگر ان کا استعمال فزیکل محسوس ہوگا، ایسا ہی لگے گا کہ جیسے آپ کی انگلیوں نے اسکرین کو چھوا ہے۔ تاہم گوگل کا یہ پراجیکٹ کب تک عملی شکل اختیار کرے گا، اس بارے میں ابھی کچھ کہنا مشکل ہے، تاہم اس پراجیکٹ کے روح رواں ایون پویرو کے مطابق انسانی ہاتھ حیران کن صلاحیت رکھتے ہیں اور ان کا کھوج نکالنا ہی میرا شوق ہے، جن کو میں ورچوئل دنیا کا حصہ بنانا چاہتا ہوں۔

The post ٹچ اسکرین اور بٹنوں سے محروم مستقبل کے فونز کیسے ہوں گے؟ appeared first on JavedCh.Com.

Reference: JavedCh.Com