اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) انگلیوں کے جوڑ چٹخانا اکثر افراد کی عادت ہوتی ہے مگر ایسا کرنے سے کیا جوڑوں کے امراض کا خطرہ بڑھتا ہے؟ دہائیوں سے کہا جارہا ہے کہ انگلیاں چٹخانے کے نتیجے میں جوڑوں کے امراض، ورم یا انجری کا سامنا ہوسکتا ہے۔ تاہم سائنسدانوں

کا کہنا ہے کہ یہ عادت کسی قسم کے مرض کا باعث نہیں بنتی بلکہ ہارورڈ کے طبی جریدے میں شائع ایک تحقیق کے مطابق چٹخانے کے نتیجے میں پیدا ہونے والی آواز درحقیقت سینوویال فلوئیڈ (رطوبت زلالی) میں گیس بھرنے کے نتیجے میں ابھرتی ہے۔  ہاتھ میں چھپا ہے کئی امراض کا علاج سینوویال فلوئیڈ ایسی پتلی رطوبت ہوتی ہے جو انسانی جسم کے بیشتر جوڑوں کے درمیان موجود خلا کو بھرتی ہے۔ تحقیق کے مطابق جب انگلیوں کو چٹخایا جاتا ہے تو یہ کچھ ایسا ہی ہوتا ہے جیسے خلا پیدا کیا جائے کیونکہ ایسا کرنے سے جوڑ کی سطح اچانک الگ ہوتی ہے جس کے نتیجے میں آواز پیدا ہوتی ہے۔ مگر ایسا بھی نہیں کہ اس عادت سے کوئی مضر اثرات مرتب نہیں ہوتے خصوصاً اگر اکثر ایسا کرتے ہوں۔  انگلیاں ہر وقت ٹھنڈی کیوں رہتی ہیں؟ ایک تحقیق کے مطابق انگلیاں چٹخانے کو عادت بنالینے سے ہاتھوں کی گرفت کمزور جبکہ ہاتھوں کی سوجن کا سامنا ہوسکتا ہے۔ اسی طرح انگلیوں کی ہڈیوں کی شکل میں تبدیلی کا امکان بھی ہوتا ہے جو کہ طویل المعیاد بنیادوں پر انجری کا خطرہ بڑھاتا ہے۔

The post کیا انگلیاں چٹخانا جوڑوں کے درد کا باعث بننے والی عادت ہے؟ appeared first on JavedCh.Com.

Reference: http://javedch.com/healthنوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین صحت کے با رے ميں کسی بھی مضمون کے حوالے سے اپنے ڈاکٹر سےلازمي مشورہ لیں۔

Leave a comment

Post here