پاکستان کرکٹ بورڈ کے بورڈ آف گورننگ کا اجلاس‘مالی سال2020-21ءکےلئے 7.76 بلین روپے پر مشتمل اخراجاتی بجٹ کی منظوری

پا لاہور۔26 جون (اے پی پی )پاکستان کرکٹ بورڈ کے بورڈ آف گورنرز کا 58 واں اجلاس جمعہ کے روز ویڈیو لنک کے ذریعے چیئرمین پی سی بی احسان مانی کی صدارت میں منعقد ہوا‘ترجمان پی سی بی کے مطابق اجلاس میں بی او جی نے مالی سال 2020-21 کے لیے 7.76 بلین روپے پر مشتمل اخراجاتی بجٹ کی منظوری دے دی ہے‘ ترجمان نے کہاکہ پی سی بی نے کفایت شعاری اپناتے ہوئے گذشتہ سال کی نسبت اس بجٹ میں 10 فیصد کٹوتی کی ہے‘سال 2019-20 میں منعقدہ کرکٹ کی کسی بھی سرگرمی پر سمجھوتہ کیے بغیر رواں سال کے بجٹ کا 71.2 فیصد حصہ صرف کرکٹ سے متعلقہ سرگرمیوں کے لیے مختص کیا گیا ہے‘ یہ اس امر کو یقینی بنائے گا کہ کورونا وائرس کی وبا ءکے سبب مالی مشکلات کے باوجودکرکٹ متاثر نہ ہواور اس ضمن میں پی سی بی مستقبل میں بھی سرمایہ کاری جاری رکھے‘ مختص کردہ 71.2 فیصد میں سے 25.2 فیصد ڈومیسٹک کرکٹ (ایونٹس/کھلاڑیوں/میچ آفیشلز/اسپورٹ ا سٹاف کے کنٹریکٹ اورہائی پرفارمنس سنٹرکے اخراجات)، 19.3 فیصدانٹرنیشنل کرکٹ (ہوم/اوے سیریز اور کھلاڑیوں کے کنٹریکٹ)،5.5 فیصد خواتین کی کرکٹ(ہوم/اوے کرکٹ اور کھلاڑیوں کے کنٹریکٹ)، 19.7 فیصد ایچ بی ایل پی ایس ایل 2021 اور 1.5 فیصد میڈیکل اور اسپورٹس سائنسز پر خرچ ہوگا‘کوویڈ 19 کی وبا کے باعث انٹرنیشنل ایونٹس کے انعقاد کا امکان واضح نہیں اور یہ حالات پی سی بی کے کمرشل پروگرام پر بھی اثرانداز ہوسکتے ہیں، ایسے میں جبکہ محصولات میں کمی کی پیش گوئی کی جارہی ہے توبی او جی نے انفراسٹرکچر میں سرمایہ کاری پر آمادگی ظاہرہ کرتے ہوئے 1.22 بلین روپے کا ترقیاتی بجٹ منظور کرلیا ہے۔گذشتہ سال کی نسبت اس رقم میں 800 ملین روپے کی کمی گئی ہے۔اجلاس میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر وسیم خان نے بی او جی کو ڈومیسٹک کھلاڑیوں کیلئے میرٹ پر مبنی کنٹریکٹ برائے 2020-21 پر بریفنگ دی ‘ جس کے مطابق یہ کنٹریکٹ یکم اگست 2020 سے نافذ العمل ہوگا‘ماہانہ وظیفے کے اس نئے اسٹرکچر کے مطابق پی سی بی ایک بار پھر 192 کھلاڑیوں (ہر ایسوسی ایشن کے لیے 32 کھلاڑیوں) کو کنٹریکٹ کی پیشکش کرے گا تاہم اس مرتبہ سب کو یکساں طور پر 50 ہزار روپے ماہوار نہیں بلکہ کٹیگری کی بنیاد پر معاوضہ ملے گی‘ماہوار وظیفے کے نیا اسٹرکچرکے مطابق کٹیگری اے پلس میں شامل 10 کھلاڑی، 1.5 لاکھ روپے ماہانہ ‘کٹیگری اے میں 38 کھلاڑی، 85 ہزار روپے ماہانہ ‘کٹیگری بی میں48 کھلاڑی، 75 ہزار روپے ماہانہ ‘کٹیگری سی میں 72 کھلاڑی، 65 ہزار روپے ماہانہ ‘کٹیگری ڈی میں 24 کھلاڑی، 40 ہزار روپے ماہانہ ہو گا۔اسی طرح ڈومیسٹک سیزن 2020-21 کے لیے میچ فیس کے اسٹرکچر کے مطابق چار روزہ کرکٹ (فرسٹ الیون، فرسٹ کلاس): پلیئنگ الیون، 60 ہزارروپے؛ ریزرو، 24 ہزار روپے‘تین روزہ کرکٹ (سیکنڈ الیون): پلیئنگ الیون، 25ہزارروپے؛ ریزرو، 10ہزارروپے‘پچاس اوورز کرکٹ (فرسٹ الیون): پلیئنگ الیون، 40ہزارروپے؛ ریزرو، 16ہزارروپے‘پچاس اوورز کرکٹ (سیکنڈ الیون): پلیئنگ الیون، 15ہزارروپے؛ ریزرو، 6ہزارروپے‘ٹی ٹونٹی کرکٹ (فرسٹ الیون): پلیئنگ الیون، 40ہزارروپے؛ ریزرو، 16 ہزارروپے‘ٹی ٹونٹی کرکٹ (سیکنڈ الیون): پلیئنگ الیون، 15 ہزارروپے؛ ریزرو، 6 ہزارروپے‘تین روزہ کرکٹ (انڈر 19): پلیئنگ الیون، 10 ہزارروپے؛ ریزرو، 4ہزارروپے‘پچاس اوورز کرکٹ(انڈر19): پلیئنگ الیون، 5ہزارروپے؛ ریزرو، 2 ہزارروپے ہو ں گے۔

Reference: http://urdu.app.com.pk

Leave a Reply

%d bloggers like this: