بہت کم سونے سے جسم کے کس حصے پرسب سے زیادہ برا اثر پڑتا ہے،تحقیق کے بعد سائنسدانوں نے بتا دیا

برلن(سی ایم لنکس)سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ بہت کم نیند لینے سے دل پر اثر پڑتا ہے۔ سائنسدانوں کو پتہ چلا کہ کشیدگی بھرے روزگار جن میں 24 گھنٹے والی شفٹ کی ضرورت ہوتی ہے اور سونے کے لئے بہت ہی کم وقت ملتا ہے،

ان سے بلڈ پریشر اور دل کی رفتار بڑھ جاتی ہے۔ویسے لوگ جو آگ بجھانا اور ہنگامی طبی سروس سمیت دیگر کشیدگی بھری ملازمتوں میں ملازم ہوتے ہیں، انہیں اکثر 24 گھنٹے کی شفٹ میں کام کرنے کے لئے بلایا جاتا ہے اور ان کے پاس نیند پوری کرنے کا کم وقت ہوتا ہے۔جرمنی کے بونBonn یونیورسٹی کے ڈینیل یوٹینگ Daniel Kuettingنے بتایا، ‘پہلی بار، ہم نے کم نیند لینے کو 24 گھنٹے والی شفٹ سے جوڑ کر دکھایا ہے، اس مطالعہ کے لئے ریسرچ اسکالرز نے 20 صحت مند ریڈیولجسٹ شامل کیا، جس میں 19 مرد اور ایک عورت تھی۔مطالعہ میں حصہ لینے والے تمام شرکاء کی کشیدگی کا تجزیہ 24 گھنٹے کی شفٹ سے پہلے اور بعد میں کیا گیا۔ یہ شریک اس دوران اوسطا تین گھنٹے کی نیند لے رہے تھے۔ کوٹینگ نے کہا، ‘اس سے پہلے دل کی سرگرمی کی تحقیقات بہت کم نیند لینے کے سلسلے میں کشیدگی کے تجزیہ کے ساتھ کیا گیا تھا. ‘محقق نے شرکاء سے خون اور پیشاب کے نمونے بھی بلڈ پریشر اور دل کی رفتار کی پیمائش کے لئے تھے۔

The post بہت کم سونے سے جسم کے کس حصے پرسب سے زیادہ برا اثر پڑتا ہے،تحقیق کے بعد سائنسدانوں نے بتا دیا appeared first on JavedCh.Com.

Reference: http://javedch.com/healthنوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین صحت کے با رے ميں کسی بھی مضمون کے حوالے سے اپنے ڈاکٹر سےلازمي مشورہ لیں۔