لاہور ۔26 اگست ( اے پی پی )انگلینڈ کے خلاف تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے آخری ٹیسٹ میچ میں سنچری اسکور کرنے پر قومی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی کی آئی سی سی ٹیسٹ رینکنگ میں ترقی ہو گئی ہے‘ساﺅتھ ہمسپٹن کی مشکل کنڈیشنز میں کھیلے گئے ٹیسٹ میچ میں اپنے کیرئیر کی 17 ویں سنچری اسکور کرنے والے اظہر علی کی عالمی درجہ بندی میں 11 درجے ترقی ہوئی ہے‘آئی سی سی کی جانب سے جاری کردہ حالیہ درجہ بندی کے بعد 34 ویں پوزیشن پر موجود اظہر علی اب رینکنگ میں 23 ویں نمبر پر پہنچ گئے ہیں جبکہ بابر اعظم نے رینکنگ میں اپنی پانچویں پوزیشن برقرار رکھی ہے‘انگلینڈ کے خلاف تیسرے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگز میں 141 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلنے والے اظہر علی نے سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ میں 0 اور 18 جبکہ دوسرے میچ کی واحد اننگز میں 20 رنز کی اننگز کھیلی تھی‘اظہر علی نے اپنے 81 ویں ٹیسٹ میچ میں حریف باﺅلرز کے سامنے زبردست مزاحمت کرتے ہوئے پاکستان کو مشکلات سے نکلنے میں مدد کی تھی‘ادھر سیریز کے آخری میچ کی پہلی اننگز میں 11 اور دوسری میں 63 ناٹ آﺅٹ رنز کی اننگز کیھلنے والے بابر اعظم کی حالیہ رینکنگ میں پانچویں پوزیشن (797پوائنٹس)برقرار ہے‘رینکنگ میں آسٹریلیا کے اسٹیواسمتھ(911 پوائنٹس)پہلے‘ویرات کوہلی(886پوائنٹس)دوسرے‘مارنس لبوشین (827پوائنٹس)تیسرے اور کین ولیمسن(812پوائنٹس)چوتھے نمبر پر موجودہیں‘سیریز میں پاکستان کی جانب سے مین آف دی سیریز کا ایوارڈ جیتنے والے وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان 3 درجے ترقی پا کر بلے بازوں کی عالمی رینکنگ میں 72 ویں پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں۔اس کے علاوہ عالمی رینکنگ میں موجودہ پاکستان کے ٹیسٹ کھلاڑیوں میں اسد شفیق 26 ویں‘شان مسعود29ویں اور عابد علی 59 ویں پوزیشن پر موجود ہیں‘طویل طرز کی کرکٹ میں پاکستان کے فاسٹ باﺅلر محمد عباس کی عالمی رینکنگ میں تنزلی ہوئی ہے‘وہ 8 ویں سے 13 ویں پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں‘لیگ اسپنریاسر شاہ ایک درجے تنزلی کے بعد 23 ویں‘شاہین شاہ آفریدی 33 ویں اور نسیم شاہ 57 ویں پوزیشن پر آگئے ہیں‘ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں 600 وکٹیں حاصل کرنے والے پہلے فاسٹ باﺅلر جیمز اینڈرسن کی عالمی رینکنگ میں ترقی ہوئی ہے‘وہ اب محمد عباس کی جگہ 8 ویں پوزیشن پر پہنچ گئے ہیں‘آسٹریلیا کے پیٹ کمنز‘انگلینڈ کے اسٹیورٹ براڈ اور نیوزی لینڈ کے نیل ویگنار بالترتیب پہلی‘دوسری اور تیسری پوزیشن پر موجود ہیں۔

Reference: http://urdu.app.com.pk

Leave a comment

Leave a Reply